آپ کی سیکیورٹی

ہم جو بھی کرتے ہیں اس میں آپ کی سیکیورٹی سب سے پہلے ہوتی ہے۔

اگر آپ کا ڈیٹا محفوظ نہیں ہے تو یہ نجی نہیں ہے۔ اسی وجہ سے ہم یقینی بناتے ہیں کہ تلاش، Maps اور YouTube جیسی Google سروسز کا دنیا کے سب سے بہتر سیکیورٹی کے انفرا اسٹرکچرز میں سے ایک کے ذریعے تحفظ کیا جاتا ہے۔

مرموز کاری منتقلی کے دوران آپ کا ڈیٹا نجی رکھتی ہے

مرموز کاری ہماری سروسز میں اعلی سطح کی سیکیورٹی اور رازداری پیش کرتی ہے۔ جب ای میل بھیجنے، ویڈیو کا اشتراک کرنے، ویب سائٹ ملاحظہ کرنے یا اپنی تصاویر اسٹور کرنے جیسی چیزیں کرتے ہیں تو آپ کا تخلیق کردہ ڈیٹا آپ کے آلہ، Google سروسز اور ہمارے ڈیٹا سنٹرز کے درمیان منتقل ہوتا ہے۔ HTTPS اور ٹرانسپورٹ پرت سیکیورٹی جیسی سر فہرست مرموز کاری ٹیکنالوجی سمیت، ہم سیکیورٹی کی متعدد پرتوں کے ساتھ ڈیٹا کا تحفظ کرتے ہیں۔

ہمارا کلاؤڈ انفرا اسٹرکچر 24/7 آپ کے ڈیٹا کا تحفظ کرتا ہے

حسب ضرورت بنائے گئے ڈیٹا مراکز سے لے کر سمندر کے نیچے فائبر کیبلز تک جو بر اعظموں کے بیچ ڈیٹا منتقل کرتے ہیں، Google دنیا کے انتہائی محفوظ اور بھروسہ مند کلاؤڈ انفرا اسٹرکچرز میں سے ایک کو چلاتا ہے۔ اور آپ کے ڈیٹا کا تحفظ کرنے اور آپ کی ضرورت کے وقت اسے دستیاب بنانے کیلئے اسے مسلسل مانیٹر کیا جاتا ہے۔ اصل میں، ہم متعدد ڈیٹا مراکز کو ڈیٹا تقسیم کرتے ہیں، تاکہ آتش زدگی یا تباہی کی صورت میں، اسے خود بخود اور بہت آسانی سے پائیدار اور محفوظ مقامات پر منتقل کیا جا سکے۔

دھمکی کا پتہ لگانے سے ہماری سروسز کا تحفظ کرنے میں مدد ملتی ہے

سپام، میلویئر، وائرسز اور نقصان دہ کوڈ کی دیگر شکلوں سمیت، دھمکیوں سے اپنی سروسز اور اصل اسفرا اسٹرکچر کا تحفظ کرنے کیلئے مسلسل ان کو مانیٹر کرتے ہیں۔

ہم حکومتوں کو آپ کے ڈیٹا تک براہ راست رسائی نہیں دیتے ہیں

ہم کبھی بھی آپ کے ڈیٹا یا آپ کا ڈیٹا اسٹور کرنے والے اپنے سرورز تک ”خفیہ“ رسائی نہیں دیتے ہیں، بات ختم۔ اس کا مطلب ہے کہ کسی حکومتی ادارہ، ریاستہائے متحدہ یا کسے اور کو ہمارے صارفین کی معلومات تک براہ راست رسائی نہیں ہے۔ کئی بار نفاذ قانون سے متعلق ایجنسیوں کی جانب سے ہمیں صارف کے ڈیٹا کیلئے درخواستیں موصول ہوتی ہیں۔ ہماری قانونی ٹیم ان درخواستوں کا جائزہ لیتی ہے اور جب کوئی درخواست بہت زیادہ عمومی نوعیت کی ہوتی ہے یا ہماری درست کارروائی کی پیروی نہیں کرتی ہے تو اسے پس پشت ڈال دیتی ہے۔ ہم نے اپنی شفافیت رپورٹ میں ان ڈیٹا درخواستوں کے بارے میں کھلا موقف اپنانے کیلئے سخت محنت کی ہے۔

مرموز کاری ایفل ٹاور کی تصویر تک وسیع ہے

Gmail کی مرموز کاری ای میلز کو نجی رکھتی ہے

پہلے دن سے، Gmail نے مرموز کردہ کنکشنز کا تعاون کیا ہے، جو غلط لوگوں کیلئے اس چیز کو پڑھنا مزید مشکل بنا دیتا ہے جو آپ بھیج رہے ہیں۔ Gmail آپ کو ممکنہ سیکیورٹی کے خطرات کے بارے میں بھی وارننگ دیتا ہے، مثلاً جب آپ کوئی ایسی ای میل موصول کرتے ہیں جو مرموز کردہ کنکشن پر نہیں بھیجی گئی۔

Gmail ای میل لفافہ سیکیورٹی اسکینر کی وارننگ کی علامت سیٹ کرتا ہے

Gmail سپام کا تحفظ مشتبہ ای میلز کو فلٹر کرتا ہے

بہت سارے میلیوئر اور فریب دہی والے حملے ایک ای میل سے شروع ہوتے ہیں۔ Gmail سیکیورٹی آپ کی سپام، فریب دہی اور میلیوئر سے کسی دیگر ای میل سروس سے زیادہ بہتر طور پر حفاظت کرتی ہے۔ Gmail صارفین کے ذریعے سپام کے بطور نشان زد کردہ ای میلز کی خصوصیات کی شناخت کرنے کیلئے کروڑوں پیغامات میں سے نکالے گئے پیٹرنز کا جائزہ لیتا ہے، پھر ان مارکرز کا استعمال مشتبہ یا خطرناک ای میلز آپ تک پہنچنے سے پہلے مسدود کرنے کیلئے کرتا ہے۔ آپ اپنی موصول کردہ مشتبہ ای میلز کیلئے "سپام کی اطلاع دیں" کو منتخب کر کے مدد کر سکتے ہیں۔

مشین لرننگ اور مصنوعی دانشمندی Gmail کے سپام فلٹر کو اور بھی درست ہونے میں مدد کرتی ہے۔ یہ اب ‎99.9%‎ سپام کو آپ کے ان باکس سے باہر رکھتی ہے۔

سیکیورٹی اپ ڈیٹ کی پیشرفت کے ساتھ Chrome براؤزر

Chrome آپ کے براؤزر کی سیکیورٹی کو خودکار طور پر اپ ڈیٹ کر دیتا ہے

سیکیورٹی ٹیکنالوجیز ہمیشہ تبدیل ہو رہی ہیں، اس لیے محفوظ رہنے کا مطلب اپ ٹو ڈیٹ رہنا ہے۔ اسی وجہ سے یہ یقینی بنانے کیلئے Chrome باقاعدگی کے ساتھ چیک کرتا ہے کہ آپ کے زیر استعمال براؤزر کا ورژن تازہ ترین سیکیورٹی اصلاحات، میلویئر اور پُر فریب سائٹس وغیرہ سے تحفظات کے ساتھ اپ ڈیٹ کردہ ہے۔ Chrome خودکار طور پر اپ ڈیٹ ہو جاتا ہے، اس لیے آپ کی حفاظت کیلئے آپ کے پاس تازہ ترین Chrome سیکیورٹی ٹیکنالوجی ہوتی ہے۔

نقصاندہ ایپ آلہ پر نگاہ رکھتی ہے

Google Play ممکنہ طور پر نقصاندہ ایپس کو آپ کے فون سے دور رکھتا ہے

آپ کے آلہ کی سب سے بڑی سیکیورٹی کی کمزریوں میں سے ایک وہ ایپس ہو سکتی ہیں جو آپ اس پر انسٹال کرتے ہیں۔ ہمارا پتہ لگانے کا سسٹم ممکنہ طور پر نقصاندہ ایپس پر ان کے Play اسٹور تک پہنچنے سے پہلے ہی پرچم لگا دیتا ہے۔ اگر ہمیں اس بارے میں یقین نہیں ہوتا ہے کہ آیا ایپ محفوظ ہے تو اس کا Android سیکیورٹی ٹیم کے اراکین دستی طور پر جائزہ لیتے ہیں۔ چونکہ ہم اپنے پتہ لگانے کے سسٹم کو بہتر بناتے ہیں، ہم ان ایپس کا دوبارہ جائزہ لیتے ہیں جو پہلے ہی Google Play پر ہیں اور ان کو ہٹا دیتے ہیں جو نقصاندہ ہو سکتی ہیں تاکہ وہ آپ کے آلہ تک نہ پہنچیں۔

Google نقصاندہ اور گمراہ کن اشتہارات کو مسدود کر دیتا ہے

آپ کا آن لائن تجربہ ان اشتہارات سے برباد ہو سکتا ہے جن میں میلویئر ہوتا ہے، جو اس مواد کو چھپاتے ہیں جسے آپ دیکھنے کی کوشش کر رہے ہیں، جعلی اشیاء کو پروموٹ کرتے ہیں، یا بصورت دیگر ہماری تشہیری پالیسیوں کی خلاف ورزی کرتے ہیں۔ ہم اس مسئلہ کو بہت سنجیدگی سے لیتے ہیں۔ ہر سال لائیو جائزہ کاروں اور پیچیدہ سافٹ ویئر کا مجموعہ تقریباً ایک ارب خراب اشتہارات کو مسدود کرتا ہے۔ ناگوار اشتہارات کی اطلاع دینے اور اپنے ملاحظہ کردہ اشتہارات کی اقسام کو کنٹرول کرنے کیلئے ہم آپ کو ٹولز بھی دیتے ہیں۔ اور انٹرنیٹ کو ہر ایک کیلئے محفوظ تر بنانے میں مدد کرنے کیلئے ہم اپنی بصیرتیں اور بہترین طرز عمل سرگرمی سے شائع کرتے ہیں۔

آن لائن محفوظ رہنے میں آپ کی مدد کرنے کیلئے سرفہرست تجاویز

ان فوری تجاویز سے اپنے آن لائن اکاؤنٹس اور ذاتی ڈیٹا کو محفوظ رکھیں۔

  • اپنے آلات کی حفاظت کریں

  • فریب دہی کی کوششوں سے بچیں

  • محفوظ طریقے سے انٹرنیٹ براؤز کریں

Google Security شیلڈ اور چیک لسٹ

مضبوط پاس ورڈز بنائیں

ایک مضبوط، محفوظ پاس ورڈ کی تخلیق اپنے آن لائن اکاؤنٹس کی حفاظت کیلئے آپ کی طرف سے کیا جانے والا اہم ترین اقدام ہے۔ ایسا کرنے کیلئے ایسے الفاظ کا سلسلہ استعمال کریں جو آپ کو یاد رہیں لیکن دوسرے اس کا اندازا نہ لگا سکیں۔ یا ایک طویل جملہ منتخب کریں اور ہر لفظ کے ابتدائی حروف سے ایک پاس ورڈ بنائیں۔ پاس ورڈ کو مزید مضبوط بنانے کیلئے کم از کم 8 حروف کا طویل پاس ورڈ بنائیں، کیونکہ پاس ورڈ جتنا طویل ہوتا ہے اتنا ہی وہ مضبوط ہوتا ہے۔

سیکیورٹی کے سوالات کے جوابات تخلیق کیے جانے کے کے مطالبے پر، جعلی جوابات کا استعمال کریں تاکہ ان کا اندازہ لگانا اور زیادہ دشوار ہو۔

دو بار ایک ہی پاس ورڈ کبھی بھی استعمال نہ کریں

ہر اکاؤنٹ کے لئے منفرد پاس ورڈز استعمال کریں

Google اکاؤنٹ، سوشل میڈیا کے پروفائلز اور ریٹیل ویب سائٹس جیسے متعدد اکاؤنٹس میں لاگ ان کرنے کیلئے ایک ہی پاس ورڈ کا استعمال کرنے سے آپ کی سیکیورٹی کے خطرہ میں اضافہ ہوتا ہے۔ یہ گھر، کار اور دفتر کیلئے ایک ہی کنجی استعمال کرنے کے مترادف ہے – اگر کسی کو ایک تک رسائی حاصل ہوتی ہے تو سبھی متاثر ہو سکتے ہیں۔

متعدد پاس ورڈز کا ٹریک رکھیں

Chrome براؤزر میں Smart Lock‏ Google جیسا کوئی پاس ورڈ مینیجر استعمال کرنے سے آپ کو اپنے مختلف آن لائن اکاؤنٹس کے سبھی پاس ورڈز کی نگہبانی کرنے اور ان کا ٹریک رکھنے میں مدد ملتی ہے۔ یہ آپ کے سیکیورٹی کے سوالات کے جوابات کا ٹریک بھی رکھ سکتا ہے اور آپ کیلئے متفرق پاس ورڈز بنا سکتا ہے۔

2 قدمی توثیق کے ذریعے ہیکروں سے بچیں

2 قدمی توثیق سے اپنے اکاؤنٹ میں لاگ ان کرنے کیلئے آپ سے اپنے صارفی نام اور پاس ورڈ کے علاوہ ایک ثانوی عنصر کا استعمال کرنے کا تقاضہ کر کے ہر اس شخص کو رسائی حاصل کرنے سے روکنے میں مدد ملتی ہے جس کو آپ کے اکاؤنٹ تک رسائی حاصل نہیں ہونی چاہئے۔ مثال کے طور پر Google میں، یہ کسی بھروسہ مند آلہ سے لاگ ان قبول کرنے کیلئے کے لیے Google تصدیق کنندہ ایپ سے تخلیق ہونے والا 6 ہندسی کوڈ ہو سکتا ہے یا آپ کی Google ایپ میں ایک اطلاعی پرامپٹ ہو سکتا ہے۔

فریب دہی سے مزید تحفظ کیلئے آپ NFC (نیئر فیلڈ کمیونیکیشن) یا بلوٹوتھ کا استعمال کر کے اپنے موبائل آلہ سے منسلک ہونے والی یا کمپیوٹر کے USB پورٹ میں داخل کی جانے والی ایک طبعی سیکیورٹی کلید کا استعمال کر سکتے ہیں۔

اپنا سافٹ ویئر اپ ٹو ڈیٹ رکھیں

سیکیورٹی کے خطرات سے اپنی حفاظت کرنے کیلئے ہمیشہ اپنے ویب براؤزر کے آپریٹنگ سسٹم، پلگ انز یا دستاویز ایڈیٹرز پر اپ ٹو ڈیٹ سافٹ ویئر کا استعمال کریں۔ سافٹ ویئر اپ ڈیٹ کرنے کی اطلاعات موصول ہونے پر جتنا جلد ممکن ہو اپ ڈیٹ کریں۔

آپ جو سافٹ ویئر باقاعدگی سے استعمال کرتے ہیں اس کا جائزہ لیں اور یقینی بنائیں کہ آپ ہمیشہ تازہ ترین دستیاب ورژنز چلا رہے ہیں۔ Chrome براؤزر سمیت کچھ سروسز خودکار طور پر اپ ڈیٹ ہو جائیں گی۔

اسکرین لاک استعمال کریں

اپنا کمپیوٹر، لیپ ٹاپ، ٹیبلیٹ یا فون استعمال نہ کرنے کے دوران، دوسروں کو اپنے آلہ میں داخل ہونے سے روکنے کیلئے اپنی اسکرین مقفل کر دیں۔ اضافی سیکیورٹی کیلئے سلیپ وضع میں جانے پر اپنے آلہ کو خودکار طور پر مقفل ہونے پر سیٹ کریں۔

اپنا فون گم ہونے پر مقفل کریں

فون گم ہونے یا چوری ہونے کی صورت میں، چند فوری مراحل میں اپنے ڈیٹا کے تحفظ کیلئے میرا اکاؤنٹ ملاحظہ کریں اور 'اپنا فون تلاش کریں' منتخب کریں۔ چاہے آپ کے پاس Android آلہ ہو یا iOS، آپ دور سے اپنے فون کا پتہ لگا سکتے ہیں اور مقفل کر سکتے ہیں تاکہ کوئی اور آپ کا فون استعمال نہ کر سکے اور آپ کی ذاتی معلومات تک رسائی حاصل نہ کر سکے۔

براؤزر Chrome میں تحفظ یافتہ پاس ورڈز دکھاتا ہے

ممکنہ طور پر نقصان دہ ایپس کو اپنے فون سے دور رکھیں

اپنی موبائل کی ایپس کو ہمیشہ ایسے ماخذ سے ڈاؤن لوڈ کریں جس پر آپ اعتماد کرتے ہیں۔ Android آلات کو محفوظ رکھنے کیلئے Google Play Protect آپ کی طرف سے Google Play اسٹور کی ایپس ڈاؤن لوڈ کر سکنے سے قبل ان کی حفاظتی جانچ کرتا ہے اور وقفہ وقفہ سے ديگر ماخدات کی ممکنہ طور پر نقصان دہ ایپس کا کھوج لگانے کے لیے آپ کے آلہ کو چیک کرتا ہے۔

اپنے ڈیٹا کو محفوظ رکھنے کیلئے:

  • اپنی ایپس کا جائزہ لیں اور استعمال نہ کی جانے والی ایپس کو حذف کر دیں
  • اپنی ایپ اسٹور کی ترتیبات ملاحظہ کریں اور خودکار اپ ڈیٹس فعال کریں
  • صرف ان ایپس کو اپنے مقام یا تصاویر جیسے حساس ڈیٹا تک رسائی دیں جن پر آپ اعتماد کرتے ہیں

ای میل کی فریب کاریوں، جعلی انعامات اور تحائف سے ہوشیار رہیں

یہ اعلان کرنے والے کہ آپ نے کچھ جیتا ہے، سروے مکمل کرنے کیلئے انعامات پیش کرنے والے یا رقم کمانے کے آسان طریقوں کو پروموٹ کرنے والے اجنبی ذرائع سے آنے والے پیغامات ہمیشہ مشکوک ہوتے ہیں، خاص طور پر اگر وہ حقیقت سے پَرے لگتے ہیں۔ مشکوک لنکس پر کبھی کلک نہ کریں اور قابل اعتراض فارمز اور سرویز میں ذاتی معلومات کبھی درج نہ کریں۔

ذاتی معلومات کی درخواستوں سے محتاط رہیں

پاس ورڈز، بینک اکاؤنٹ اور کریڈٹ کارڈ کے نمبرز یا حتی کہ آپ کی تاریخ پیدائش جیسی ذاتی معلومات طلب کرنے والے مشکوک ای میلز، فوری پیغامات یا پوپ اپ ونڈوز کا جواب نہ دیں۔ چاہے یہ پیغام کسی ایسی سائٹ سے ہی کیوں نہ آئے جس پر آپ اعتماد کرتے ہیں، جیسے کہ آپ کا بینک، تب بھی لنک پر کلک نہ کریں یا پیغام کا جواب نہ دیں۔ اپنے اکاؤنٹ میں لاگ ان کرنے کیلئے ان کی ویب سائٹ یا ایپ پر بلا واسطہ جانا بہتر ہے۔

یاد رکھیں اصل سائٹس اور سروسز ایسے پیغامات نہیں بھیجیں گی جو آپ سے ای میل کے ذریعے پاس ورڈز یا مالیاتی معلومات بھیجنے کو کہیں۔

شخصیت گیروں سے ہوشیار رہیں

اگر کوئی ایسا شخص ای میل کرتا ہے جسے آپ جانتے ہیں، لیکن پیغام عجیب لگتا ہے تو ہو سکتا ہے ان کا اکاؤنٹ ہیک ہو گیا ہے۔

درج ذیل پر نظر رکھیں:

  • پیسہ کیلئے فوری درخواستیں
  • دوسرے ملک میں پھنسے ہونے کا دعوی کرنے والا شخص
  • یہ کہنے والا شخص کہ اس کا فون چوری ہو گیا ہے اور اس کو کال نہیں کی جا سکتی

پیغام کا جواب نہ دیں یا کسی لنک پر کلک نہ کریں یہاں تک کہ آپ تصدیق کر لیں کہ ای میل اصل ہے۔

ڈاؤن لوڈ کرنے سے پہلے فائلیں دوبارہ چیک کریں

کچھ اعلی فریب دہی کے حملے متاثر دستاویزوں اور PDF منسلکات کے ذریعے ہو سکتے ہیں۔ اگر کسی ایسے مشکوک منسلکہ سے آپ کا سامنا ہوتا ہے تو اسے محفوظ طریقے سے کھولنے اور آلہ کے متاثر ہونے کا خطرہ کم کرنے کیلئے Chrome یا Google Drive کا استعمال کریں۔ وائرس کا پتہ لگنے پر ہم آپ کو ایک تنبیہ دکھائیں گے۔

محفوظ نیٹ ورکس استعمال کریں

عوامی یا مفت WiFi، حتی کہ جن کیلئے پاس ورڈ درکار ہو، کو استعمال کرنے کے بارے میں محتاط رہیں۔ عوامی نیٹ ورک سے منسلک ہونے پر قرب و جوار کا کوئی بھی شخص آپ کی انٹرنیٹ سرگرمی جیسے کہ وہ ویب سائٹس جو آپ ملاحظہ کرتے ہیں اور ان سائٹس میں ٹائپ کی جانے والی آپ کی معلومات کو مانیٹر کر سکتا ہے۔ اگر عوامی یا WiFi نیٹ ورک کے علاوہ آپ کے پاس کوئی اور اختیار نہیں ہے تو Chrome براؤزر ایڈریس بار میں آپ کو مطلع کرے گا کہ کوئی سائٹ محفوظ ہے یا نہیں۔

حساس معلومات درج کرنے سے پہلے محفوظ کنکشنز تلاش کریں

جب آپ ویب براؤز کر رہے ہوں – اور خاص طور پر اگر آپ پاس ورڈ یا کریڈٹ کارڈ کی تفصیلات جیسی حساس معلومات درج کرنے کا منصوبہ بنا رہے ہوں – تو یقینی بنائیں کہ آپ کی ملاحظہ کی جانے والی سائٹس کا کنکشن محفوظ ہے۔ محفوظ URL‏، HTTPS سے شروع ہوگا۔ Chrome براؤزر URL فیلڈ میں ایک سبز اور مکمل طور پر مقفل آئیکن دکھائے گا اور اس پر "محفوظ" لکھا ہوگا۔ اگر یہ محفوظ نہیں ہے تو اس پر "غیر محفوظ" لکھا ہوگا۔‏ HTTPS آپ کے براؤزر یا ایپ کو آپ کی ملاحظہ کی جانے والی ویب سائٹس سے محفوظ طریقے سے منسلک کر کے آپ کی براؤزنگ کو محفوظ رکھنے میں مدد کرتا ہے۔